6

اسلامی نظریاتی کونسل ریپ کےمجرم کی کاسٹریشن کی شرعی حیثیت کاجائزہ لےگی

Spread the love

[ad_1]

Dr Qibla Ayaz

فوٹو: ڈاکٹر قبلہ ایاز/فیس بک

اسلامی نظریاتی کونسل کی اپیکس باڈی کا 225 واں دو روزہ اہم اجلاس 26 اور 27 اکتوبر کو طلب کر لیا گیا ہے جس میں دیگر امور کے علاوہ فوجداری قانون ترمیمی آرڈیننس 2020 ریپ کے مجرم کی آختہ کاری (کاسٹریشن) کی شرعی حیثیت کا بھی جائزہ لیا جائے گا۔

کونسل کے ترجمان رانا زاہد کے مطابق اس اجلاس کا فیصلہ چند ضروری امور کو مد نظر رکھتے ہوئے اراکین کونسل کی مکمل تعداد 20 کی بجائے موجودہ 12اراکین کے ساتھ ہی کیا گیا ہے۔
رواں سال مئی میں مدت رکنیت پوری کرنے پر 8 ماہرین موضوعات اراکین کی جگہ ابھی نئی تقرری ہونا باقی ہے۔ کونسل کے قواعد کے مطابق 8 اراکین کی عدم موجودگی کی وجہ سے وزارت قانون کا نمائندہ بھی شریک ہوگا اور سابق رکن کونسل جسٹس (ر) رضا خان کو بھی بطور قانونی ماہر شرکت کی دعوت دی گئی ہے۔ اجلاس کی صدارت چیئرمین کونسل ڈاکٹر قبلہ ایاز کریں گے۔
اجلاس بچوں کو جسمانی سزا کی ممانعت کا بل 2021، بعض جرائم میں سزائے موت کے بجائے تعزیری سزاؤں کے امکانات، سیشن کورٹس کو ریپ کیسز سننے کا اختیار، تعلیمی اداروں میں عربی لازمی کرنے کا بل 2020، رویت ہلال پر قانون سازی کے لیے بل اور شادی کی تقریب کو آسان بنانے کی تحریک کا بھی جائزہ لے گا۔
اجلاس کے ایجنڈے کے مطابق زیر بحث موضوعات میں نعت خوانی اور اس کا شرعی اسلوب اور نباتات اور جنگلی حیات کا تحفظ۔ اسلامی احکام اور تعلیمات بھی شامل ہوں گے جبکہ اس موقع پر وزیراعظم پاکستان کی طرف سے رحمۃ للعالمین صلی اللہ علیہ وسلم اتھارٹی کے قیام کے اعلان کی تحسین کی قرارداد بھی منظور کی جائے گی۔

[ad_2]

Source link

کیٹاگری میں : URDU

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں