ڈی جی آئی ایس آئی اسلام آباد میں ایران ، روس ، چین ، تاجکستان سے جاسوس مہمانوں کی میزبانی کرتا ہے: ذرائع

0
ڈی جی آئی ایس آئی اسلام آباد میں ایران ، روس ، چین ، تاجکستان سے جاسوس مہمانوں کی میزبانی کرتا ہے ذرائع

اے آر وائی نیوز نے ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ

ڈائریکٹر جنرل (ڈی جی) انٹر سروسز انٹیلی جنس (آئی ایس آئی) لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید نے ہفتہ کو اسلام آباد میں چین ، روس ، ایران اور تاجکستان کے جاسوس سربراہوں کے اجلاس کی میزبانی کی۔

ذرائع کے مطابق ، ڈی جی آئی ایس آئی فیض حمید نے چین ، ایران ، روس اور تاجکستان کے جاسوس سربراہوں کے ایک اجلاس کی صدارت کی جہاں انہوں نے سکیورٹی کی جاری صورتحال پر تبادلہ خیال کیا۔

اجلاس میں تاجکستان ، ترکمانستان اور ازبکستان کے سربراہ بھی موجود تھے

کیونکہ افغانستان میں ابھرتی ہوئی سکیورٹی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ فورم نے امن اور استحکام کو یقینی بنانے کے لیے انٹیلی جنس شیئرنگ پر اتفاق کیا۔

ڈی جی آئی ایس آئی نے حال ہی میں افغانستان کا دورہ کیا ہے جہاں انہوں نے طالبان کے ارکان ،

حزب اسلامی کے سربراہ گلبدین حکمت یار اور دیگر سے ملاقات کی تاکہ طالبان کے قبضے کے بعد کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا جا سکے

۔

ذرائع کے مطابق ڈی جی آئی ایس آئی فیض حمید پاکستان کے اعلیٰ حکام کے وفد کی قیادت کر رہے ہیں اور 4 ستمبر کو افغان دارالحکومت میں نئی ​​انتظامیہ سے مذاکرات کے لیے کابل پہنچے تھے۔

ذرائع کے مطابق (طالبان) وفد سے ملاقات کے دوران دونوں فریقوں نے پاک افغان سرحد پر سفری طریقہ کار اور مختلف ممالک کی جانب سے

(افغانستان) سے غیر ملکیوں کے انخلا کے حوالے سے (درخواستوں پر تبادلہ خیال کیا)۔

مزید پڑھیں: (تالبان پاکستان) کو دوسرے گھر کے طور پر دیکھیں ، سپاکس (ذبیح اللہ مجاہد) کہتے ہیں

ذرائع نے مزید بتایا کہ اجلاس کے دوران سیکورٹی کے مسائل بھی سامنے آئے اور مشترکہ طریقہ کار وضع کیا جائے گا

تاکہ ایسے عناصر کو روکا جاسکے جو موجودہ صورتحال سے فائدہ اٹھا سکتے ہیں اور سرحد کے دونوں اطراف کے امن کو بگاڑ سکتے ہیں۔

پاکستان کے جاسوس سربراہ نے 5 ستمبر کو گلبدین حکمت یار سے ملاقات کی اور ایک جامع حکومت بنانے سے متعلق امور پر تبادلہ خیال کیا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here