کراچی میں ڈاکو بچوں کو چھریوں کے دوران ڈھال کے طور پر استعمال کرتے ہیں

0
کراچی میں ڈاکو بچوں کو چھریوں کے دوران ڈھال کے طور پر استعمال کرتے ہیں

کراچی: کراچی میں ڈاکوؤں نے ڈکیتی کے دوران بچوں کو ڈھال کے طور پر استعمال کرنا شروع کر دیا ہے۔

شہر کے نارتھ کراچی علاقے میں سی سی ٹی وی کیمرے میں قید ایسے ہی ایک واقعہ میں دو ڈاکو ایک بچے کے ساتھ

ایک شہری کو لوٹتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے

۔ اس واقعے کی ویڈیو سوشل میڈیا پلیٹ فارم پر وائرل ہو گئی ہے۔

رہائشی کو نارتھ کراچی کے سیکٹر

11-A میں اس کے گھر کے باہر لوٹ لیا گیا۔

مزید پڑھیں: ‘بے روزگار’ ڈاکوؤں نے کچھ نہیں لوٹا جب پولیس نے کراچی میں پراسرار ڈاکو بولی کی تحقیقات کی۔

اس سال کے شروع میں

، کراچی میں ایک چھاپہ مار پولیس ٹیم کے ساتھ

فائرنگ کے تبادلے کے بعد تین ڈاکو گرفتار ہوئے اور چار کرائم سین سے فرار ہونے میں کامیاب ہوئے۔

سینئر سپرنٹنڈنٹ پولیس (ایس ایس پی) ایسٹ ساجد عامر سدوزئی نے میڈیا کو

بتایا تھا کہ ڈاکوؤں

کا ایک گروہ گلستان جوہر, کے علاقے میں ایک بنگلے میں داخل ہوا

اور اطلاع ملنے کے بعد پولیس کی ایک ٹیم اس جرم پر پہنچ گئی۔

فائرنگ کے تبادلے کے بعد تین ڈاکو پکڑے گئے اور چار فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے

، ایس ایس پی سدوزئی نے مزید کہا کہ گرفتار ڈاکو ‘سوک گینگ’ کے رکن ہیں۔

شہر کے نارتھ کراچی علاقے میں سی سی ٹی وی کیمرے میں قید ایسے ہی

ایک واقعہ میں دو ڈاکو ایک بچے کے ساتھ ایک شہری کو لوٹتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔ اس واقعے کی ویڈیو سوشل میڈیا پلیٹ فارم پر وائرل ہو گئی ہے۔

رہائشی کو نارتھ کراچی کے سیکٹر 11-A میں اس کے گھر کے باہر لوٹ لیا گیا۔

مزید پڑھیں: ‘بے روزگار’ ڈاکوؤں نے کچھ نہیں لوٹا جب پولیس نے کراچی میں پراسرار ڈاکو بولی کی تحقیقات کی۔

اس سال کے شروع میں ، کراچی میں ایک چھاپہ مار پولیس ٹیم کے ساتھ فائرنگ کے تبادلے کے بعد تین ڈاکو گرفتار ہوئے

اور چار کرائم سین سے فرار ہونے میں کامیاب ہوئے۔

سینئر سپرنٹنڈنٹ پولیس (ایس ایس پی) ایسٹ ساجد عامر سدوزئی نے میڈیا کو بتایا تھا کہ ڈاکوؤں,

کا ایک گروہ گلستان جوہر, کے علاقے میں ایک بنگلے میں داخل ہوا

اور اطلاع ملنے کے بعد پولیس کی ایک ٹیم اس جرم پر پہنچ گئی۔

فائرنگ کے تبادلے کے بعد تین ڈاکو پکڑے گئے اور چار فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے

، ایس ایس پی سدوزئی نے مزید کہا کہ گرفتار ڈاکو ‘سوک گینگ’ کے رکن ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here