2

Indian soldier’s widow demands freedom of Kashmir

Spread the love

[ad_1]

مقبوضہ کشمیر کے ضلع پونچھ میں پیر کے روز سے جاری طویل ترین آپریشن میں 2 اعلیٰ افسران سمیت ہلاک ہونے والے بھارتی فوجیوں کی تعداد 10 ہوگئی جبکہ 2 لاپتہ فوجیوں کا بھی تا حال کوئی سراغ نہیں مل سکا۔

پونچھ میں جاری آپریشن میں ہلاک ہونے والے ایک بھارتی فوجی کی بیوہ سے جب صحافیوں نے پوچھا کہ وہ بھارتی حکومت کو کیا پیغام دینا چاہیں گی تو انہوں نے کہا کہ سرکار کو یہی کہنا چاہتی ہوں کہ ہمارے جوان روز کشمیر میں مرتے ہیں، آج 5 مرے ہیں تو میڈیا والے آگئے مگر سرکار تھوڑی کچھ کرتی ہے۔

خاتون کا کہنا تھا کہ ہلاک فوجیوں کے لواحقین کو 3 دن بعد کوئی نہیں پوچھتا۔ یہ مسئلہ حل ہونا چاہیے وہ کشمیر مانگ رہے ہیں تو انہیں دے دو کیوں کہ لیڈروں کے بیٹے تو بارڈر پر ڈیوٹی نہیں کرتے وہ ایک بار کرکے دیکھیں تاکہ انہیں بھی پتہ چل سکے۔

واضح رہے کہ بھارتی فوج نے 2 اہلکاروں کی گمشدگی اور ہلاکتوں کے بعد ضلع پونچھ میں 16 اکتوبر کی صبح ایک بڑے سرچ آپریشن کا آغاز کیا ہے۔

گزشتہ ایک ہفتے سے مقبوضہ کشمیر کے ضلع پونچھ میں ہزاروں بھارتی فوجی حملہ آوروں کی تلاش میں ہیں تاہم اس دوران 2 مرتبہ فوج پر حملے ہوئے جس میں ہلاکتیں ہوئیں۔

فوج نے مذکورہ آپریشن میں اب تک اپنے دو سینئر اہلکاروں سمیت 10 فوجیوں کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے تاہم ابھی تک کسی بھی عسکریت پسند کے شہید ہونے کی کوئی اطلاع نہیں ملی۔

جموں ڈویژن کے پونچھ اور راجوڑی کے درمیان سرحدی علاقوں کے گھنے جنگلوں میں اس تصادم کی ابتداء پیر 11 اکتوبر  کو ہوئی تھی۔

بھارتی فوج کے مطابق گم شدہ فوجیوں کی تلاش کے لیے ہفتے کی صبح بڑے پیمانے پر جاری آپریشن میں سکیورٹی دستوں کی بڑی تعداد کے ساتھ ساتھ ہیلی کاپٹر بھی حصہ لے رہے ہیں۔

واضح رہے کہ حالیہ برسوں میں یہ پہلا موقع ہے کہ بھارتی فوج کو ایک ہی مسلح تصادم میں اتنے زیادہ جانی نقصان کا سامنا کرنا پڑا.


[ad_2]

Source link

کیٹاگری میں : URDU

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں